وفاق کا تحفظ اور غیرجمہوری طاقتوں کا مقابلہ کرنا پڑے گا ،بلاول بھٹو

0
206
Bilawal bhutto specch at ghari khuda baksh

پاکستان پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ یہ سندھ کا دارالحکومت الگ کرنا چاہتے ہیں اور وفاق آج بھی خطرے میں ہے

گڑھی خدا بخش بھٹو میں ورکرز کنوینشن سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ عوام کے معاشی حقوق پر کٹھ پتلی حکومت کے وار جاری ہیں ۔ لیکن میں غیر جمہوری قوتوں کی سازشوں کو ناکام بنانے نکلا ہوں اور مجھے عوام کی مدد کی ضرورت ہے

پیپلزپارٹی چیئرمین کا کہنا تھا کہ یہ ہماری حکومت اور ممبران کو توڑنے کی گزشتہ ایک سال سے کوشش کررہے ہیں لیکن آج تک ناکام ہیں ۔ پیپلز پارٹی نے عوام اور صوبوں کو اختیار دلوایا، آصف زرداری نے پاکستان کھپے کا نعرہ لگا کر ملک کو بچایا۔

انہوں نے کہا کہ پی ٹی آئی اورایم کیو ایم کا کٹھ پتلی اتحاد کراچی پر قبضہ کرنا چاہتا ہے لیکن ہم  خبردارکرتے ہیں غیرجمہوری رویوں کی وجہ سے وفاق کو نقصان ہوسکتا ہے۔صوبوں کو معاشی حق نہیں دیا جا رہا اور وفاق کی ناکامی کی وجہ سے صوبے دیوالیہ ہورہے ہیں۔جی ڈی اے، ایم کیو ایم اور دیگر سندھ کو تقسیم کرنا چاہتے ہیں، وہ سمجھتے ہیں ہماری قیادت پر دبائو اور جیل میں ڈال کر سندھ پر قبضہ کرسکتے ہیں لیکن پی پی پی ان کے سامنے دیوار کی طرح کھڑی رہے گی۔

مضبوط حکومت کو گرانے کا کوئی آئینی طریقہ نہیں ہے اور وفاق قیادت پر کیسز ڈال کر دباؤ ڈالنے کی کوشش کر رہا ہے لیکن ہم غیر جمہوری قوتوں اور کٹھ پتلی حکومت کے سامنے سر نہیں جھکائیں گے۔

وفاق صوبوں کے ساتھ ناانصافی کر رہا ہے، ہمیں غیر جمہوری قوتوں کا مقابلہ اور وفاق کو بچانا پڑے گا۔

بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ صوبے کے وسائل پر ڈاکا ڈالا جارہا ہے اور عوام کے حقوق خطرے میں ہیں۔

LEAVE A REPLY