کفرکی حکومت چل سکتی ہے لیکن ظلم کی نہیں ، رانا ثنا اللہ

0
43
مجھ پر لگایا گیا الزام جعلی اور یہ فراڈ کیس ہے، رانا ثنا اللہ

لاہور: منشیات برآمدگی کیس میں گرفتار پاکستان مسلم لیگ (ن) پنجاب کے صدررانا ثنا اللہ نے ایک بار پھر حکومت پر کڑی تنقید کرتے ہوئے کہا ہے کہ کفر کی حکومت چل سکتی ہے لیکن ظلم کی حکومت نہیں چل سکتی۔

جوڈیشل کمپلیکس کے باہرمیڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے رانا ثنا اللہ نے کہا کہ ظلم کی رات بہت جلد ختم ہونے والی ہے، مجھ پر لگایا گیا الزام جعلی اور یہ فراڈ کیس ہے، سیاسی مخالفین کو جیلوں میں بند کرنا اور جیلوں میں ایذا پہنچانا، اس کے علاوہ حکومت کو کوئی کام نہیں ہے۔

رانا ثنا اللہ نے کہا انہوں نے سیاسی انتقام کے علاوہ کوئی کام نہیں کیا، کفر کی حکومت چل سکتی ہے لیکن ظلم کی حکومت نہیں چل سکتی، ظلم کی حکومت زیادہ دیر نہیں رہ سکتی، حکمران ظالم ٹولہ ہے۔

منشیات کیس میں گرفتار مسلم لیگ (ن)کے رہنما رانا ثنا اللہ کو آج جوڈیشل کمپلیکس میں عدالت کے روبرو پیش کیاگیا تھا۔ اس موقع پر سیکیورٹی کے انتہائی سخت انتظامات کیے گئے تھے۔ پولیس نے جوڈیشل کمپلیکس کے اطراف غیر متعلقہ افراد کا داخلہ بند کر دیاتھا جب کہ پولیس کی بھاری نفری احاطہ عدالت کے اندار اور باہر تعینات کر دی گئی تھی۔ تاہم انسداد منشیات عدالت میں جج کی عدم موجودگی کے باعث رانا ثنا اللہ کے کیس پرسماعت بغیر کارروائی ملتوی کر دی گئی۔

عدالت کے ریڈر نے رانا ثناء اللہ کے کیس پر14 ستمبرکی تاریخ دے دی جب کہ رانا ثنااللہ کے جوڈیشل ریمانڈ میں 14 ستمبرتک توسیع کر دی گئی۔

واضح رہے کہ اے این ایف نے گاڑی سے منشیات برآمد ہونے پر رانا ثنا اللہ کو یکم جولائی کو گرفتار کیا تھا۔

LEAVE A REPLY